12 132

ڈونلڈ ٹرمپ نے سوشل میڈیا کے گرد گھیرا تنگ کر دیا

سوشل میڈیا کے گرد گھیرا تنگ امریکی صدر ٹرمپ میدان میں آگئے۔صدارتی حکم نامے کے تحت سوشل میڈیا کو ضابطہ اخلاق کا پابند کردیاگیا۔ٹرمپ نے ایگزیکٹیو آرڈر پر دستخط کردیے۔اس ایگزیکٹیو آرڈر کی صدر سے منظوری کے بعد امریکا میں سوشل میڈیا کے نگراں ادارے فیس بک اور ٹوئٹر کے خلاف صارفین کا مواد بلاک کرنے یا اس میں ترمیم کرنے پر قانونی کارروائی کر سکیں گے۔صدر ٹرمپ نے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر الزام عائد کیا کہ انھیں ’لامحدود اختیارت‘ حاصل ہیں۔ ایگزیکٹو آرڈر کے مسودے میں کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا نیٹ ورکس ’سلیکٹیو سینسر شپ‘ میں ملوث ہیں۔ٓامریکی صدر نے کہا کہ بڑی سوشل میڈیا کارپوریشنز کو اب امریکیوں کو تنگ نہیں کرنے دیں گے،سوشل میڈیا چلانےو الوں کے پاس بہت پیسہ ہے،امریکی ٹیکس کا پیسہ کسی سوشل میڈیا کمپنی کو جانے نہیں دیں گے،سوشل میڈیا کی اجارہ داری کو ختم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ٹویٹر غیر جانبدارپلیٹ فارم نہیں ہے۔ٹویٹر کو شٹ ڈاؤن کرنا پڑا تو قانونی طور پر کریں گے۔ایگزیکٹوآرڈر کو جلد ہی قانونی پلیٹ فارمز پر چیلنج کر دیا جائے گا۔واضح رہے کہ صدر ٹرمپ نے 26 مئی کو ایک ٹوئٹ کیا تھا جس میں کیلیفورنیا کے گورنر پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ ڈاک کے ذریعے ووٹ دینے کا انتظامی حکم نامہ جاری کرکے انتخابات میں دھاندلی کرنے کی تیاری کررہے ہیں اور لاکھوں بیلٹ پیپر بغیر کسی تصدیق کے ارسال کرکے نتائج پر اثر انداز ہونے کی کوشش کا آغاز ہوچکا ہے۔تاہم ٹوئٹر نے صدر ٹرمپ کے اس ٹوئٹ پر ”گیٹ دی فیکٹ“ کی تنبیہ چسپاں کردی جس پر کلک کرنے سے معلوم ہوتا ہے کہ صدر ٹرمپ کا بیان خلاف واقعہ ہے اور بیلٹ پیپر کی سہولت صرف تصدیق شدہ ووٹرز ہی کو فراہم کی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں