au 37

اب تک ہزاروں کشمیریوں کو قتل کرچکے ہیں یوم یکجیتی کشمیر ریلی

بریکوٹ (ظاہر شاہ کمال )بھارت کی قابض فوج مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کاسلسلہ ختم کیا جائے کشمیریوں کی قربانیوں اور تحریک آزادی میں شامل ان شہیدوں کو جس نے اپنے جانوں کے نظرانے پیش کئے ان کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں، اب تک ہزاروں کشمیریوں کو قتل کرچکے ہیں اور بھارتی مظالم کا سلسلہ اب بھی جاری ہے۔ دنیا بھر میں آج یوم یکجہتی کشمیر منایا جا رہا ہے جس سے یہ ثابت ہو جاتا ہے کہ کشمیر پاکستان کا شہہ رگ ہے ان خیالات کا اظہار پاکستان ریولوشنری گارڈز کے چیرمین عزیزاحمد خان ،سماجی شخصیت انجئینر شرافت علی خان ،پی ٹی ائی پی کے 6کے انفارمیشن سیکرٹری اسد خان ،سجاد خان ،ڈاکٹر امتیاز خان نے یوم یکجہتی کشمیر میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے منعقدہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم پر احتجاجی جلسے اور کانفرنسوں کا انعقاد کشمیریوں کی قربانیوں اور تحریک آزادی کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے دنیا بھر میں کیا جاتا ہے کشمیر پاکستان کا ہے اور رہے گا انہوں نے کہا کہ یوم یکجہتی کشمیر بنانے کا مقصد عالم اقوام کی توجہ مسئلہ کشمیر کے حل اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت دینے کی جانب مبذول کرانا ہے،کشمیر کا مسئلہ برسوں سے اقوام متحدہ میں ہے۔کشمیر کا مسئلہ 7 دہائیوں سے اقوام متحدہ کی توجہ کا منتظر ہے۔ کشمیر مسئلے کو اقوام متحدہ کی منظور شدہ قراردادوں کے مطابق حل کرنے کے لیے کئی قراردادیں بھی منظور کی گئیں، لیکن ان پر عمل درآمد آج تک نہیں ہو سکا اور یہ صورتحال عالمی ادارے کی ساکھ کے لیے بڑا امتحان ہے۔کشمیر ایسا مسئلہ ہے جو نہ صرف کشمیریوں کے لیے زندگی موت کا مسئلہ ہے بلکہ پاکستان کے لیے بھی یہ شہ رگ کی حیثیت رکھتا ہے۔اذاد بریکوٹ پریس کلب کے صدر ظاہر شاہ کما ل نے کہا کہ یوم یکجہتی کشمیر منانے کا آغاز 5 فروری 1990ء سے کیا گیا تھا جس کے بعد سے ہر سال باقاعدگی سے یہ دن منایا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ بھارت کی قابض فوج مقبوضہ کشمیر میں 1989ء سے اب تک 95 ہزار 283 کشمیریوں کو قتل کرچکی ہے اور بھارتی مظالم کا سلسلہ اب بھی جاری ہے۔ریلی پر امن اندز میں بریکوٹ چوک میں سے شروع ہوئی اور پیر بابا چوک میں انڈیا مردہ باد اور کشمیر بنے گا پاکستان کی نعروں پر ختم ہوا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں