1 1,418

حکومت ان فلموں پر پابندی لگا کر ان میں کام کرنے والے تمام ایکٹروں کو گرفتار کرے.عوامی حلقے

پشتوٹیلی فلموں اورسی ڈی ڈراموں میں فحاشی اورعریانی عروج پر،نیم برہنہ ڈانس،شراب اور ماردھاڑ سے بھرپورفلمیں پختون ثقافت کو مسخ کرنے کی ایک گہری سازش ہے،حکومت ان فلموں پر پابندی لگا کر ان میں کام کرنے والے تمام ایکٹروں کو گرفتار کرے،عرصہ سے بننے والی پشتوٹیلی فلموں اورسی ڈی ڈراموں سے معاشرہ میں فحاشی اورعریانی کو مسلسل فروغ مل رہا ہے،ان ڈراموں وفلموں میں نیم برہنہ ڈانس،شراب ،ہیرواورہیروئن کے مابین نازیبا حرکات سمیت ماردھاڑ اور چیخ وپکار کے علاوہ دیکھنے کو کچھ نہیں مل رہاہے،اس حوالے سے سوات کے عوام کا کہناہے کہ یہ فحش اور عریاں فلمیں پختون ثقافت کو مسخ کرنے اور پختون قوم کودنیا کے سامنے عیاش قوم کی شکل میں پیش کرنے کی گہری سازش ہے جس میں ان فلموں کے مصنف،ہدایتکار،اداکار اوراداکارائیں برابرکے شریک ہیں،عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ پختون ایک پر امن،محب الوطن ،مہمان نواز اور باپردہ قوم ہے جو اپنی ایک الگ ثقافت رکھتی ہے مگر بعض دولت کے پجاری وسازشی عناصر ان کے کلچر کو تباہ کرنے میں لگے ہوئے ہیں،عوام کا کہاکہ ان ٹیلی فلموں اورسی ڈی ڈراموں میں اداکارائیں جو لباس استعمال کرتی ہیں اس سے یہ پتہ نہیں چلتا کہ وہ لباس کی اور یااپنے جسم کی نمائش کررہی ہیں، انہوں نے کہاکہ اس وقت صوبہ خیبرپختونخوا میں سی ڈیز کی بڑی بڑی مارکیٹیں موجود ہیں جہاں پرآزادانہ طورپر ان فحش فلموں کاکاروبار ہورہا ہے ،کم عمر بچے بھی ان مارکیٹوں سے بڑی آسانی کے ساتھ یہ فلمیں حاصل کررہے ہیں جس کی وجہ سے نئی نسل گمراہ ہورہی ہے،اس کے علاوہ آج کل چلنے والے پشتو گانے بھی فحاشی کو فروغ دے رہے ہیں کیونکہ پشتو کے نئے گلوکار اسٹیج پر گانا گاتے ہوئے جو حرکات کرتے ہیں وہ انتہائی شرمناک ہیں،پہلے وقتوں کی فلمیں سبق آموزاور فحاشی وعریانی سے پاک ہوتی تھیں جنہیں لوگ فیملی کے ساتھ بیٹھ کر دیکھ سکتے تھے مگر آج کل کی پشتو ٹیلی فلمیں اس قابل نہیں کہ لوگ انہیں دیکھیں،عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت اور دیگر اعلیٰ حکام پشتوفلموں پر فوری پابندی لگانے سمیت مارکیٹ میں موجود ٹیلی فلمیں ، سی ڈی ڈراموں اورگانوں کی کیسٹوں کو ضبط کریں اور ان فحش ٹیلی فلموں وڈراموں میں کام کرنے والے اداکاروں ،ہدایت کاروں ،مصنفین اورگلوکاروں کوگرفتار کرکے انہیں عبرتناک سزائیں دیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں