images 81

سب ڈویژن بریکوٹ میں جعلی ڈسپنسروں اور نیم حکیموں کا را ج گلی گلی میں غیر رجسٹرڈ ہسپتال غیر قانونی زچہ بچہ ،میٹر نیٹی سنٹر زاور غیر مستند لیبارٹریوں کی بھر مار

سب ڈویژن بریکوٹ میں جعلی ڈسپنسروں اور نیم حکیموں کا را ج ،گلی گلی میں غیر رجسٹرڈ میڈیکل سٹورز، غیر قانونی زچہ بچہ ،میٹر نیٹی سنٹر زاور غیر مستند لیبارٹریوں کی بھر مار،عوام لوٹ گئے،ڈرگ انتظامیہ اور برائے نام ہیلتھ ریگولیٹری اتھارٹی ناکام ، تحصیل انتظامیہ بھی خاموش ،حکام بالا سے ایکشن کا مطالبہ ۔بریکوٹ میں غیر قانونی اور غیر رجسٹرڈ ڈسپنسریوں کی بہتات غیر مستند اور نان کوالیفائید ڈاکٹرز یا ڈسپنسروں نے دیہاتوں کا رخ کر لیا اس پاس کے علاقوں میں ہیپٹائیٹس سی، بی اور ایچ پائی لوری سمیت مختلف امراض میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے بریکوٹ سمیت مختلف علاقوں کنڈاک جہانگیر ،وینہ ،ناگوہا،املوکدرہ ،ابوہا،ناوگئی ،محلہ فضل اباد کالونی ،گل اباد کالونی اور کئی دیہاتی علاقوں میں جعلی ڈاکٹروں کی چاندنی ہو گئی ہے اور غریب عوام کو او ٹی سی ادویات دے کر مذید امراض تحفے میں دے رہے ہیں ان جعلی ڈسپنسرزاور ایل ایچ ویزنے اپنے ہسپتال بنا دئیے ہیںسادہ لوح عوام سے مال بٹور رہے ہیںاورتو اور بریکوٹ میں جعلی نیم حکیم موٹاپا کم کرنے ،ہیپٹایئٹس ،امراض معدہ ،بانجھ پن،مردانہ کمزوری،اور یہاں تک کے ا یڈز کے علاج کا بھی دعوہ کرکے سادہ لوح لوگوں کو قبر میں اتار کر ہی چھوڑتے ہیں ،بریکوٹ میں اندھیر نگری چوپٹ راج کا معاملہ ہے ایسا لگتا ہے کہ ڈرگ ایکٹ بریکوٹ میں لاگو ہی نہیں جس کی وجہ سے اکثر علاقوں میں شرح اموات میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ عوام نے متعلقہ حکام سے ان جعلی ڈسپنسروں اور نیم حکیموںاور ایل ایچ ویز کے خلاف اپریشن کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور مزکورہ علاقوں کو ہنگامی بنیادوں پر سرکاری ڈسپنسریاں قائیم کرنے کی اپیل کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں