images-2 129

سوات میں انفلوئنزا کا مریض سوشل میڈیا پر کرونا کا شکار قراردیدیا گیا

سوات میں انفلوئنزا کے مرض میں مبتلا 26 سالہ نوجوان کو سوشل میڈیا پر غلط فہمی کی بنیاد پر کرونا وائرس کا مریض قرار دیدیا گیا ۔ڈپٹی کمشنر سوات ثاقب رضا اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر سید اکرام شاہ نے میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سوشل میڈیا پر یاسر سے متعلق غلط خبریں چل رہی ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ کہا جا رہا ہے کہ یاسر کرونا وائرس کا شکار ہوگیا جبکہ ابھی تو اس مریض کو کورونا وائرس کا مشتبہ مریض بھی نہیں کہہ سکتے۔ڈاکٹروں نے مرض کی تشخیص کے لیے یاسر کے خون کے نمونے اسلام آباد بھیج د یئے ہیں۔ڈپٹی کمشنر سوات ثاقب رضا اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر سید اکرام شاہ نے نے عوام سے اپیل کی ہے کہ سوشل میڈیا پر اس شخص کے متعلق کورونا وائرس کی جو خبر چل رہی ہے وہ سراسر غلط ہے، عوام سے درخواست ہے کہ افواہوں پر کان نہ دھریں اور جب تک کسی خبر کی تصدیق نہ ہو اسے آگے نہ پھیلائیں۔سیدو شریف ہسپتال انتظامیہ کے مطابق یاسر کے خون کے نمونے ٹیسٹ کے لیے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ اسلام آباد بھیجے گئے ہیں۔ڈاکٹروں کا خیال ہے کہ یاسر کو گذشتہ 6 دنوں سے انفلوئنزا کا مرض لاحق ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں