123 168

گیارہ سال بعد سوات میں ایمرجنسی اور اپریشن کی حیثیت ختم کردی گئی

سوات :گیارہ سال بعد سوات میں ایمرجنسی اور اپریشن کی حیثیت ختم کردی گئی سوات کی تمام سیکورٹی انتظامات سول انتظامہ کو منتقل کردئے گئے ۔سوات میں پاک فوج کا اختیارات کے منتقلی کے حوالے سے پروگرام کا انقاد ہوا جس میں وزیر اعلیٰ خیبر پختوننخوا محمود خان، کور کمانڈر پشاور لیفٹنٹ جنرل نظیر بٹ،جی او سی ملاکنڈ ڈیو یژن میجر جنرل خالد سعید اور ڈی آئی جی خیبر پختونخوا سید اشفاق انور نے شرکت کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کا کہنا تھا پاک فوج نے سوات میں مکمل امن قائم کیا ہے اس لئے اب وہ تمام اختیارات سول انتظامہ کے حوالے کررہے ہیں۔کو رکمانڈر پشاور لیفٹنٹ جنرل نظیر بٹ کا کہنا تھا کہ سوات میں عسکریت پسند وں نے مظالم کا بازار گرم کررکاتھا جسے پاک آرمی ،پولیس اور سوات کے عوام نے بہادری سے کیا اورجانوں کے نظرانے دے کر سوات میں امن قائم کیا ،اختیارات کی منتقلی پر سوات کے عوام نے خوشی کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ سوات میں پائیدار امن قائم ہو چکا ہے اور ضلعی انتظامیہ تمام امور احسن طریقے سے چلاسکتی ہے۔ آخر میں پاک فوج نے ضلع سوات کی انتظامیہ کو اختیارات کی منتقلی کے نشانی اور جھنڈا پیش کیا جبکہ کور کمانڈر پشاور لیفٹنٹ جنرل نظیر بٹ نے وزیر اعلی محمود خان کو یادگاری شیلڈ پیش کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں