89

بریکوٹ نادرا افس میں بچوں کے فارم (ب) یا شناختی کارڈ بنانا عوام کے لئے عذاب بن گیا

بریکوٹ نادرا آفس میں بچوں کے فارم (ب) یا شناختی کارڈ بنانا عوام کے لئے عذاب بن گیا ، عورتوں ، معزوروں اور بوڑھوں کے لئے کوئی انتظام نہیں ہے ، دھوپ میں بیٹھے بے اثرہ لوگ سارا دن گزانے کے بعد واپس مایوس گھروں کوچلے جاتے ہے ، وی ائی پیز اور سفارشی لوگوں کا کام منٹوں میں ہوجاتا ہے لیکن غریب مزدور کا کا کام ہفتوں میں بھی نہیں ہوتا ، عوامی نمائندے اس مسئلے کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لئے اقدامات کریں کیونکہ یہ ہماری ماوں ، بہنوں کی بے عزتی سے کم نہیں ، ان خیالات کا اظہار ملگری پیرامیڈیکس ضلع سوات کے صدر میاں رومان علی نے اخباری بیان جاری کرتے ہوئے کیا ، انہوں نے کہا کہ بریکوٹ نادرہ آفس عوامی ضروریات پوری کرنے کے بجائے عذاب بن گیا ہے ، گھنٹوں گھنٹوں انتظار کرنا معمول بن گیا ، گیٹ پر کھڑا چوکیدار عوام کے ساتھ انتہائی بد اخلاقی کے ساتھ پیش آتے ہیں جوکہ نادرا افس عملے کے بدنامی کا سبب بن رہے ہیں ، انہوں نے حکومت اور منتخب نمائندوں ایم پی اے اور ایم این اے سے مطالبہ ہے کہ نادرا افس میں عملے کی کمی کو پورا کرنے کے ساتھ ساتھ بلڈنگ کا بندوبست کیا جائے جہاں ہر خواتین کے لئے باپردہ انتظام ہو ، انہوں نے کہا کہ نادرہ موبائل وین کے لئے ہر گاؤں میں ایک دن مقرر کیا جائے تاکہ وہاں کے شہریوں کی ضروریات پوری ہوسکیں ۔وقارعالم

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں