971

تین ارب روپے کی لاگت سے 109 کلومیٹر بارہ انچ گیس پائپ لائن کی تکمیل سے سوئی گیس لوپریشر کا مسئلہ مکمل حل ہوجائیگا .ضلعی ناظم محمد علی شاہ

تین ارب روپے کی لاگت سے 109 کلومیٹر بارہ انچ گیس پائپ لائن کی تکمیل سے سوئی گیس لوپریشر کا مسئلہ مکمل حل ہوجائیگا ، سوئی گیس لو پریشر کا مسئلہ صرف سوات میں نہیں خیبر پختونخوا کے دیگر شہروں سمیت ملک بھر میں ہے ، امسال پورے ملک میں بارشیں ہوئیں اور موسم سرد ہونے سے اس کے استعمال میں اضافہ ہوا اور کم پریشر کا مسئلہ شروع ہوگیا ، جس کے حل کیلئے حکومت سمیت محکمہ سوئی گیس اقدامات اٹھا رہی ہے ، ان خیالات کا اظہار ضلعی ناظم محمد علی شاہ اور انچارج سوئی گیس ماصم خان نے سوات پریس کلب میں سوئی گیس لوپریشر کے حوالے سے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، انہوں نے کہا کہ کم پریشر کے خاتمے کیلئے پچھلے سال کی طرح امسال بھی سی این جی اسٹیشنز بند کردئے گئے ہیں لیکن استعمال زیادہ ہونے سے کچھ علاقوں میں پریشر کا مسئلہ ہے جس کے حل کیلئے محکمہ اقدامات اٹھارہی ہے ، انہوں نے کہا کہ مشیر وزیر اعظم انجینئر امیر مقام کی کوششوں سے مردان ٹوسوات 12 انچ پائپ لائن منصوبے کا افتتاح کیا گیا ہے جو جلد پایہ تکمیل تک پہنچ کر یہاں کے عوام کے گیس کا مسئلہ حل ہوجائیگا ، انہوں نے کہا کہ سوات کے منتخب ممبران اسمبلی نے تین سال میں کوئی بھی میگا پراجیکٹ نہیں لایا اور مشیر وزیراعظم نے کڈنی ہسپتال سمیت بجلی فیڈرز اور دیگر بے شمار تعمیراتی و ترقیاتی منصوبے لائے جس سے عوام مستفید ہورے ہیں ، انہوں نے کہا کہ عوام افواہوں اور پرا پیگنڈوں کے بجائے عملی اقدامات کی طرف دیکھیں اور کام کرنے والوں کی حوصلہ افزائی کریں ، آخر میں انچارج سوئی گیس ماصم نے کہا کہ جنریٹر اور کمپریسر کا استعمال ختم کیا جائے تو کم پریشر کا مسئلہ کم ہو جائیگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں