989

خوازہ خیلہ میں گرینڈ جرگہ نے اپر سوات ضلع کیلئے تحریک شروع کرنے کا اعلان کردیا

خوازہ خیلہ میں گرینڈ جرگہ نے اپر سوات ضلع کیلئے تحریک شروع کرنے کا اعلان کردیا ،آل پارٹیز کانفرنس جلد بلا کر تمام سیاسی پارٹیوں وکلاء ،سول سوسائٹی اور مذہبی جماعتوں کو اعتماد میں لیکر ائندہ کیلئے لائحہ عمل تیار کرینگے ،گزشتہ روز مشیر انٹی کرپشن ڈاکٹر حیدر علی خان کی ہجرہ میں گرینڈ جرگہ کا انعقاد کیا گیا جس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت اس موقع پرمقررین نے کہا کہ آپر سوات ضلع وقت کی اہم ضرورت ہے آپر سوات کی آبادی تقریبا پندرہ لاکھ ہے اور یہاں پر تین صوبائی اور ایک قومی اسمبلی کی نشستیں ہے ،جبکہ شانگلہ دو صوبائی اور ایک قومی اور تور غر صرف ایک سیٹ کے اضلاع ہے تو ہمارے ساتھ یہ ضلم کیوں ہو رہا ہے اور یہاں کے لاکھوں عوام اپنے کاموں کیلئے مینگورہ شہر جاتے ہیں کیونکہ تمام ضلعی و ڈویژنل دفاتر وہاں پر واقع ہے جس کے وجہ سے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ وزیر اعلی خیبر پختونخواہ پرویزخٹک نے پہلے ہی اسکو آپر سوات کو ضلع بنانے کا اعلان کر رہا تھا لیکن بعض وجوہات کی بناء پر انہوں نے ملتوی کردیا ،انہوں نے ڈاکٹر حیدر علی سے پر زور مطالبہ کیا کہ اس سلسلے میں اپنا کردار اد ا کریں ،اس موقع پر ڈاکٹر حیدر علی نے خطاب اور بعد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آپ لوگوں کا مطالبہ جائز ہے اس سلسلے میں وزیر اعلی نے گراسی گراونڈ میں الگ ضلع بنانے کا اعلان کرنا تھا اور پھر کمیٹی بنائی گئی لیکن اسکا کوئی پتہ نہیں چلا انہوں نے کہا کہ مینگورہ شہر پر ایک طرف ٹریفک اور دوسری طرف کام کا اتنا بوجھ ہے کہ اگر آپر سوات کو الگ ضلع نہ بنایا گیا تو پانچ سال بعد مکمل سسٹم ختم ہوجائیگا اور کاروباری زندگی بھی بری طرح متاثر ہوجائیگی انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں جلد ہی وزیر اعلی پرویزخٹک سے ملاقات میں اپ لوگوں کا مطالبہ پیش کرونگا اور آپر سوات کو الگ ضلع بنا کر ہونگا ،انہوں نے کہا کہ آپ لوگوں نے جس تحریک کا اعلان کیا ہے میں آپ لوگوں کے شانہ بشانہ رہونگا اور اپنے طرف سے ہر ممکن مدد کرونگا ،اس سلسلے میں انہوں نے خصوصی کمیٹیاں تشکیل دے دی جو تمام سیاسی پارٹیوں سے رابطے کرینگے اور اس تحریک کو کامیاب بناینگے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں