180

سوات سمیت 8 اضلاع میں لاک ڈاون نافذ کرنے کا فیصلہ واپس لے لیاگیا

خیبر پختونخوا میں کورونا کے بڑھتے کیسز کو دیکھتے ہوئے ہائی رسک اضلاع میں مکمل لاک ڈاؤن کے نفاذ کا فیصلہ واپس لے لیا گیا ہے۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق خیبرپختونخوا کے 8 اضلاع سمیت ملک کے بڑے شہروں میں لاک ڈاؤن لگانے کا فیصلہ ایک روز بعد واپس لے لیا گیا ہے، کورونا ہائی رسک اضلاع میں لاک ڈاؤن کی تیاریاں مکمل کرلی گئی تھیں اور اس حوالے سے 27 مئی کو این سی او سی نے اعلامیہ بھی جاری کیا لیکن اب اسے واپس لے لیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز خیبرپختونخوا میں کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے جن 8 اضلاع میں لاک ڈاؤن لگانے کا اعلامیہ جاری کیا گیا تھا ان میں پشاور، لوئر دیر، مردان، نوشہرہ، ملاکنڈ، چارسدہ اور صوابی شامل ہیں جبکہ مردان میں پہلے ہی لاک ڈاؤن لگایا جا چکا ہے۔ این سی او سی نے لاک ڈاؤن کی سفارشات تیار کرلیں تھیں، لاک ڈاؤن 2 مئی سے لگنے کا امکان تھا تاہم اس کا حتمی فیصلہ وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس میں ہونا تھا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں