573

سول ہسپتال بریکوٹ کے ڈاکٹرزنے صحافیوں پر کوریج کی پابندی لگا دی

سول ہسپتال بریکوٹ کے ڈاکٹرزنے صحافیوں پر کوریج کی پابندی لگا دی،پریس کلب کے ممبر کو حراساں کیا،آزاد بریکوٹ پریس کلب کے جانب سے پیر بابا چوک میں ایم ایس ڈاکٹر فخر عالم کے روئیے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ مختلف بینر اٹھا رکھے تھے اور ہسپتال انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی بھی کی۔
آذاد بریکوٹ پریس کلب کے صحافی اہم واقعی کی کوریج کے لئے گزشتہ روز سول ہسپتال بریکوٹ گئے جہاں پرہسپتال انتظامیہ نے ایم ایس ڈاکٹر فخر عالم کی سربراہی میں نیوز چینل کے رپورٹر حراساں کیا اور سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دی جس پر آزاد بریکوٹ پریس کلب کے صحافیوں نے پیر بابا چوک بریکوٹ میں پر امن احتجاجی مظاہر ہ کیا جس میں سول سوسائیٹی کے اہم شخصیات جس میں اے این پی کے رہنما حماد خان،پی کے 6کے سابقہ امیدوار نورسلام باچا،پی ایم ایل کے رہنما عجب خان،ظاہرشاہ کمال،پریس کلب صدر ابرار خان،اقبال خان،سید مظفر شاہ باچا،شہاب خان,تاجدار عالم،پی ار جی کے چیرمین عزیز احمد خان اورسول سوسائیٹی کے اہم کارکنوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی،شرکاء نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا عوام کی انکھیں اور کان ہیں اور ملک کا چھوتا ستون ہیں میڈیا کو مثبت کوریج پر کوئی نہیں روک سکتا،آزاد بریکوٹ پریس کلب کے صحافی علاقے کی ترقی میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں ہم انکے شانہ بشانہ ہیں اور سول ہسپتال بریکوٹ کے انتظامیہ کو میڈیا کے ساتھ نامناسب رویہ نہیں رکھنا چاہئی،احتجاجی مظاہرہ پرامن انداز میں ختم ہوا اور اے اے سی بریکوٹ کو یاداشت بھی جمع کراد ی اور سول ہسپتال بریکوٹ کے انتظامیہ کے خلاف محکمانہ کاروئی کا مطالبہ کیا گیا،سوات الیکٹرانک میڈیا ایسوسیشن نے واقعے کی بھرپور مذمت کی ہےایس ای ایم اے کے صدر ر نیاز احمدخان کی سربراہی میں تمام عہدیدارن نے ڈپی کمشنر سوات سے ملاقات کی جس پر ڈپٹی کمشنر ضلع سوات ثاقب رضا نے کمیٹی مقرر کرتے ہوئے واقعے کی غیر جانبدار تحقیات کرانے کا حکم جاری کر دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں