347

لاک ڈاؤن کے باعث وکلاء برادری بھی مشکلات کا شکار

ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن سوات کے صدر حضرت معاذ ایڈووکیٹ نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ گزشتہ ایک ماہ سے عدالتوں کی بندش اور لاک ڈاون کی وجہ سے وکلاء برادری شدیدمالی بحران کا شکار ہے۔ انہوں نے کہا کہ زیادہ تر وکلاء کے آمدن کا واحدذریعہ معاش وکالت ہے اور اگر عدالتی کاروائی تعطل کا شکار ہو جائے تو ان کو شدید مالی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے،صدر بار ایسوسی ایشن نے ایک پریس ریلیزکے ذریعے وفاقی اور صوبائی حکومت سے پر زور مطالبہ کیا ہے کہ وکلاء برادری کی مشکلات کو سامنے رکھتے ہوئے ان کے ساتھ مالی معاونت کی جائے اور مصیبت کی اس گھڑی میں وکلاء برادری کا ہاتھ بٹھائے۔انہوں نے مزیدکہا کہ وکلاء کی مالی مشکلات کم کرنے کا ایک مناسب طریقہ یہ بھی ہو سکتا ہے کہ احساس پروگرام میں وکلاء برادری کو شامل کیا جاکر بذریعہ بار کونسل ان کو مذکورہ ریلیف دیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں