87

پاکستان ورکرز فیڈریشن کے نیشنل کوارڈینیٹر شوکت علی انجم

سوات پاکستان ورکرز فیڈریشن کے نیشنل کوارڈینیٹر شوکت علی انجم نے کہا ہے کہ پاکستان میں مزدوروں کا استحصال جاری ہے ، برائے نام قونین بنائے جاتے ہیں لیکن اُن قوانین کو عملی طور پر لاگو کرنے کے لئے کسی بھی سطح پر اقدامات نہیں اُٹھائے جارہے ، مینگورہ میں میڈیا کے نمائندوں کو بریفنگ دیتے ہوئے شوکت علی انجم نے کہا کہ پاکستان ورکرز فیڈریشن میں 427 یونینز اور مجموعی پر 9 لاکھ سے زائد ممبران ہے، 2005 میں تین بڑی یونینز کو ضم کیا گیا اور پاکستان ورکرز فیڈریشن کا قیام عمل میں لایا گیا جس کا مقصد معاشرے کے پسے ہوئے طبقے یعنی مزدوروں کے حقوق کی جنگ لڑنا اور اُن کے استحصال کو روکنا ہے۔واجدخان بریکوٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں