394

کاروباری سرگرمیاں 24گھنٹے کھولنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

شہر اقتدار میں کاروباری سرگرمیاں 24گھنٹے کھولنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد انتظامیہ نے شہر اقتدار میں کاروباری سرگرمیاں 24گھنٹے کھولنے کا فیصلہ کرتے ہوئے نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔
جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق کہ مخصوص ایس او پیز کے تحت شاپنگ مالز سیلون باربر شاپس اور دیگر دوکانیں ہفتے کے 7 روز کھولنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔
نوٹیفیکیشن میں کہا گیا ہے کہ ہاتھ ملانے پر پابندی ہوگی جبکہ صارفین کولازمی طور پر ماسک اور گلوز استعمال کرنا ہوگا۔
اسلام آباد انتظامیہ کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن میں مزید کہا گیا کہ کپڑے کی دکانوں پر ٹرائی روم بند رکھے جائیں گے جبکہ دکان داروں کو سماجی فاصلے اور سنیٹائزر کے استعمال کو یقینی بنانا ہوگا۔
حکومت نے کاروبار کھولنے کے اوقات میں توسیع کردی
یاد رہے اس سے قبل سپریم کورٹ کی جانب سے تمام شاپنگ مالز کھولنے کا حکم دیتے ہوئے ہفتے اور اتوار کو بھی ملک کی تمام چھوٹی مارکیٹیں اور تمام مالز کھلی رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے۔
سپریم کورٹ میں کورونا ازخود نوٹس کیس کی سماعت چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں ہوئی جس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ ملک بھر کے تمام مالز، دکانیں اور بازار کھول دیئے جایئے۔
سماعت کے دوران چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ مارکیٹس میں چھوٹے طبقے کا کاروبار ہے اور اگر دکانیں بند کریں گے تو دکاندار تو کورونا کے بجائے بھوک سے مر جائے گا۔
چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ چھوٹے دکانداروں کو کام کرنے سے نہ روکیں اور تمام مالز بھی کھولیں کیونکہ مالز میں ایس او پیز پر زیادہ بہتر عمل ہوسکے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں